گوادر کو اسپشل اکنامک ڈسٹرکٹ (GSED) ڈکلیئر کرنے کیلئے اسلام آباد میں منعقدہ اعلیٰ سطحی اجلاس نے اصولی طور پر اتفاق کیا۔ باقاعدہ منظوری وفاقی کابینہ دی گی۔

تفصیلات کے مطابق گوادر ڈویلپمنٹ اتھارٹی، گوادر انڈسٹریل اسٹیٹ اتاھرٹی اور آباد کی تجویز پر گوادر کو اسپشل اکنامک ڈسٹرکٹ ڈکلیئر کرنے کیلئے اسلام آباد میں ایک اعلیٰ سطحی اجلاس منعقد ہوئی۔ وزارت صنعت و تجارت اور وزارت پلاننگ کمیشن کی جانب سے منعقدہ اجلاس میں وفاقی و صوبائی سیکریٹرز کے علاؤہ ڈائریکٹر جنرل جی ڈی اے مجیب الرحمٰن قمبرانی ، چیئرمین گوادر پورٹ اتھارٹی پسند خان بلیدی، ایم ڈی جیڈا وقاص احمد لاسی، محمود یاقوب ایڈوائزر GIEDA, عفان قریشی کنوینئر آباد گوادر چیپٹر، صدر گوادر چیمبر آف کامرس شمس الحق کلمتی اور دیگر نے شرکت کی۔ اجلاس میں گوادر ڈویلپمنٹ اتھارٹی، گوادر پورٹ آتھارٹی،گوادر انڈسٹریل اسٹیٹ اتھارٹی اور آباد کی جانب سے گوادر کو اسپشل اکنامک ڈسٹرکٹ ڈکلیئر کرنے کی تجویز کا تفصیلی جائزہ لیا گیا۔ اور صوبائی حکومت کی جانب سے اس مد میں اٹھائے گئے اقدامات اور پیش رفت کا بھی جائزہ لیا گیا۔

اس کے ساتھ ساتھ متفقہ طور پر بنائی گئی  GSED پہ پریزینٹیشن مینجنگ ڈائریکٹر GIEDA نے پیش کی اجلاس میں متفقہ طور پر گوادر کو اسپشل اکنامک ڈسٹرکٹ ڈکلیئر کرنے کا اصولی فیصلہ کیا گیا۔ اور طے کیا گیا کہ اس ضمن میں قانونی و تکنیکی حوالوں سے جائزہ لینے کے بعد وفاقی کابینہ سے منظوری حاصل کی جائیگی۔ واضح رہے کہ گوادر کو اسپشل اکنامک ڈسٹرکٹ ڈکلیئر کرنے کیلئے گوادر ڈویلپمنٹ اتھارٹی، گوادر پورٹ آتھارٹی،گوادر انڈسٹریل اسٹیٹ اتھارٹی اور آباد نے اس سال صوبائی حکومت کو تجویز پیش کی تھی جسے صوبائی حکومت نے منظور کرکے مزید کارروائی کیلئے وفاقی حکومت کو بھیج دیا تھا۔ گوادر اسپشل اکنامک ڈسٹرکٹ ڈکلیئر ہونے کے بعد یہاں کاروباری سرگرمیوں کا آغاز ہوگا اور یہ خطہ کا سب سے بڑا کاروباری مرکز بن جائے گا اور ہزاروں کاروبار و روزگار کے مواقع پیدا ہونگے اور یہ شہر ترقی کریگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں